Return to Video

The Internet: IP Addresses and DNS

  • 0:02 - 0:09
    انٹرنیٹ: IP پتہ اور DNS
  • 0:10 - 0:14
    ہیلو! میرا نام پاؤلا ہے،
    اور میں مائیکرو سافٹ میں سافٹ ویئر انجینئر
  • 0:14 - 0:20
    ہوں۔ آئیں اس بارے میں بات کرتے ہیں کہ انٹرنیٹ کیسے
    کام کرتا ہے۔ میرا کام نیٹ ورکس کے ایک دوسرے کے
  • 0:20 - 0:26
    ساتھ بات چیت کرنے کے قابل ہونے پر انحصار کرتا ہے،
    لیکن 1970 کی دہائی میں اس کے لئے کوئی معیاری طریقہ کار نہیں تھا۔
  • 0:26 - 0:33
    مواصلات کو ممکن بنانے کے لئے، انٹرنیٹ ورکنگ پروٹوکول
    ایجاد کرنے کا سہرا ونٹ سرف اور
  • 0:33 - 0:39
    باب کاہن کے کام کو جاتا ہے۔ اس ایجاد نے
    اس کی بنیاد رکھی ہے جسے اب ہم انٹرنیٹ کہتے ہیں
  • 0:39 - 0:44
    ۔ انٹرنیٹ، نیٹ ورکس کا ایک نیٹورک ہے۔
    یہ پوری دنیا سے اربوں آلات کو ایک
  • 0:44 - 0:51
    ساتھ منسلک کرتا ہے۔ تو ہو سکتا ہے آپ وائی فائی کے ذریعے
    لیپ ٹاپ یا کسی فون سے جڑے ہوں، پھر وہ وائی فائی کنیکشن
  • 0:51 - 0:57
    انٹرنیٹ سروس فراہم کنندہ (یا ISP) سے مربوط
    ہوتا ہے، اور یہ ISP آپ کو لاکھوں نیٹورکس
  • 0:57 - 1:02
    کے ذریعہ دنیا بھر کے اربوں آلات سے جوڑتا ہے
    جو سب سب ایک دوسرے
  • 1:02 - 1:09
    سے جڑے ہوئے ہیں۔ ایک
    ایسی چیز جسے زیادہ تر لوگ نہیں سراہتے یہ ہے کہ
  • 1:09 - 1:16
    انٹرنیٹ واقعی میں ایک ڈیزائن فلسفہ ہے
    اور ایک فن تعمیر ہے جو پروٹوکول کے
  • 1:16 - 1:20
    ایک مجموعے میں ظاہر ہوتا ہے ایک پروٹوکول قواعد اور معیارات کا
    ایک معروف مجموعہ ہے، کہ اگر تمام فریقین
  • 1:20 - 1:26
    اس کے استعمال پر متفق ہیں تو یہ انہیں کسی دقت کے بغیر
    بات چیت کرنے کی اجازت دے گا۔ انٹرنیٹ دراصل فزیکل طور پر جیسے کام
  • 1:26 - 1:32
    کرتا ہے وہ اس حقیقت سے کم اہم ہے کہ اس ڈیزائن
    فلاسفی نے انٹرنیٹ کو مواصلات کی نئی ٹیکنالوجیز کو
  • 1:32 - 1:38
    اپنانے اور جذب کرنے کی اجازت دی ہے
    ۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ایک نئی ٹیکنالوجی
  • 1:38 - 1:43
    کے انٹرنیٹ کو کسی فیشن میں استعمال کرنے کے لئے،
    اسے صرف یہ جاننے کی ضرورت ہے کہ کون سے پروٹوکولز
  • 1:43 - 1:49
    کے ساتھ کام کرنا ہے۔ انٹرنیٹ پر موجود تمام مختلف آلات
    کے منفرد پتے ہوتے ہیں۔ انٹرنیٹ پر ایک پتہ
  • 1:49 - 1:54
    صرف ایک نمبر ہوتا ہے، بالکل ایک فون نمبر
    یا کسی گلی کے پتے کی طرح، جو نیٹ ورک کے دھارے پر
  • 1:54 - 2:00
    ہر کمپیوٹر یا آلہ کے لئے
    منفرد ہوتا ہے۔ یہ اسی کے مشابہ ہے کہ
  • 2:00 - 2:05
    جس طرح زیادہ تر گھروں اور کاروباروں کا ایک ڈاک کا پتہ ہوتا ہے
    ۔ آپ کو کسی شخص کو ڈاک میں خط بھیجنے
  • 2:05 - 2:09
    کے لئے اسے جاننے کی ضرورت نہیں ہے،
    لیکن آپ کو ان کا پتہ معلوم ہونے کی
  • 2:09 - 2:14
    ضرورت ہے اور یہ بھی کہ پتہ کو مناسب طریقے سے
    کیسا لکھا جائے تاکہ خط ڈاک نظام کے ذریعہ اپنی منزل تک پہنچایا جا سکے۔
  • 2:14 - 2:20
    انٹرنیٹ پر کمپیوٹرز کے لئے پتہ کا نظام مشابہ ہے
    اور یہ انٹرنیٹ مواصلات میں استعمال ہونے والے
  • 2:20 - 2:25
    انتہائی اہم پروٹوکولز میں سے ایک کا حصہ
    تشکیل دیتا ہے جسے فقط انٹرنیٹ پروٹوکول
  • 2:25 - 2:32
    یا IP کہا جاتا ہے۔ پھر ایک کمپیوٹر کا پتہ اس کا
    IP ایڈریس کہلاتا ہے۔ کسی ویب سائٹ کا دورہ کرنا ایسے ہی
  • 2:32 - 2:37
    جیسے آپ کا کمپیوٹر کسی دوسرے کمپیوٹر سے
    معلومات پوچھ رہا ہے۔ آپ کا کمپیوٹر دوسرے کمپیوٹر کے IP
  • 2:37 - 2:41
    پتہ پر ایک پیغام بھیجتا ہے اور وہ اپنے
    اصلی پتے کے ساتھ بھی بھیجتا ہے، لہذا
  • 2:41 - 2:48
    دوسرے کو کمپیوٹر معلوم ہو جاتا ہے کہ اپنا جواب کہاں بھیجنا ہے۔
    آپ نے ایک IP ایڈریس دیکھا ہوگا۔ یہ صرف اعداد کا
  • 2:48 - 2:55
    ایک گروہ ہوتا ہے! ان اعداد کو ایک نسبتی حیثیت ترتیب
    میں منظم کیا جاتا ہے۔ جیسے گھر کے پتے میں ملک، شہر، گلی
  • 2:55 - 3:02
    اور مکان نمبر ہوتا ہے، اسی طرح IP
    پتے کے بہت سے حصے ہوتے ہیں۔ بالکل تمام ڈیجیٹل ڈیٹا کی طرح،
  • 3:02 - 3:10
    ان میں سے ہر ایک عدد کی بٹس میں
    نمائندگی کی جاتی ہے۔ روایتی IP پتے 32 بٹس طویل ہوتے ہیں،
  • 3:10 - 3:16
    پتے کے ہر حصے کے لئے 8 بٹس ہوتے ہیں۔
    پہلے والے اعداد عام طور پر اس آلہ کے ملک اور
  • 3:16 - 3:22
    علاقائی نیٹ ورک کی شناخت کرتے ہیں۔ پھر سب
    نیٹ ورکس آتے ہیں، اور پھر آخر میں مخصوص
  • 3:22 - 3:30
    آلے کا پتہ ہوتا ہے۔ IP پتہ کے اس ورژن کو
    IPv4 کہا جاتا ہے۔ اسے 1973 میں ڈیزائن کیا گیا تھا
  • 3:30 - 3:36
    اور 80 کی دہائی کے اوائل میں وسیع پیمانے پر
    اپنایا گیا تھا، اور انٹرنیٹ سے منسلک آلات
  • 3:36 - 3:41
    کے لئے 4 بلین سے زیادہ منفرد پتے فراہم کرتا
    ہیں۔ لیکن انٹرنیٹ ونٹ سرف کے
  • 3:41 - 3:47
    تصور سے بھی کہیں زیادہ معروف ہو گیا ہے
    اور اس لئے 4 بلین منفرد پتے
  • 3:47 - 3:53
    کافی نہیں ہوں گے۔ اب ہم IPv6 کہلوانے والے ایک زیادہ
    طویل IP پتہ فارمیٹ میں ایک کثیر سالہ منتقلی
  • 3:53 - 4:04
    کے وسط میں ہیں، جو ہر پتے میں 128 بٹس
    استعمال کرتا ہے اور 340 ان-ڈیسیلین زیادہ
  • 4:04 - 4:09
    منفرد پتے فراہم کرتا ہے۔ یہ زمین پر ریت کے ہر ایک ذرے کے
    اپنا IP پتہ رکھنے کے لئے کافی ہونے سے
  • 4:09 - 4:16
    بھی زیادہ ہے۔ زیادہ تر صارفین انٹرنیٹ پتے کو نہیں
    دیکھتے یا اس کی پرواہ نہیں کرتے ہیں۔ ڈومین نام سسٹم یا DNS
  • 4:16 - 4:23
    کہلوانے والا ایک نظام www.example.com
    کی طرح کے ناموں کو ان کے متعلقہ پتوں کے ساتھ منسلک کرتا ہے
  • 4:23 - 4:29
    ۔ آپ کا کمپیوٹر DNS کو ڈومین نام تلاش
    کرنے اور وابستہ IP پتہ حاصل کرنے کے لئے استعمال کرتا ہے
  • 4:29 - 4:33
    جسے آئی پی پتہ کو آپ کے کمپیوٹر کو انٹرنیٹ پر منزل سے
    مربوط کرنے کے لئے استعمال کرتا ہے۔ اور یہ
  • 4:33 - 4:38
    کچھ اس طرح جاتا ہے: (آواز
    1) "ارے، ہیلو، میں www.code.org پر جانا چاہتا ہوں۔"
  • 4:38 - 4:50
    (آواز 2) "امم.. ہاں مجھے اس ڈومین کا IP پتہ نہیں معلوم
    مجھے آس پاس سے پوچھنے دو۔ ارے، کیا آپ کو معلوم ہے
  • 4:50 - 4:59
    کہcode.org تک کیسے جانا ہے؟ " (آواز 3)
    "ہاں، مجھے یہ یہاں سے پتہ لگ گیا ہے یہ 174.129.14.120 ہے۔"
  • 4:59 - 5:04
    (آواز 2) "اوہ ٹھیک ہے، اعلٰی، شکریہ۔ میں اسے لکھنے لگا ہوں اور بعد کے لئے
    محفوظ کرنے لگا ہوں اگر کسی صورت میں مجھے دوبارہ
  • 5:04 - 5:14
    اس کی ضرورت پڑتی ہے۔ ارے یہ وہ پتہ ہے جو
    آپ چاہتے تھے۔" (آواز 1) "بہت اعلٰی! آپ کا شکریہ۔" لہذا،
  • 5:14 - 5:20
    ہم اربوں مختلف ویب سائٹ میں سے ایک کو تلاش
    کرنے کے لئے اربوں آلات کے لئے ایک سسٹم کس طرح
  • 5:20 - 5:28
    ڈیزائن کرتے ہیں؟ ایسا کوئی طریقہ نہیں ہے کہ ایک DNS
    سرور تمام آلات سے تمام درخواستوں کو سنبھال سکتا ہے۔
  • 5:28 - 5:33
    جواب یہ ہے کہ DNS سرورز ایک تقسیم شدہ درجہ بندی
    میں جڑے ہوئے ہیں، اور علاقوں میں بٹے ہوئے ہیں،
  • 5:33 - 5:41
    جو بڑے ڈومینز جیسے .org، .com، .net کے لئے
    ذمہ داری کو تقسیم کرتے ہیں۔
  • 5:41 - 5:48
    DNS کو اصل میں سرکاری اور تعلیمی اداروں کے لئے
    کھلا اور عوامی مواصلات کا پروٹوکول بنانے کے لئے
  • 5:48 - 5:55
    تخلیق کیا گیا تھا۔ اس کے کھلے پن کی
    وجہ سے، DNS سائبر حملوں کے لئے حساس ہے۔
  • 5:55 - 6:03
    ایک مثال حملہ DNS فریب کاری ہے۔ یہ
    تب ہوتا ہے جب ایک ہیکر DNS سرور کو استعمال کرنے کے قابل ہو جاتا ہے اور
  • 6:03 - 6:09
    اسے غلط IP پتے کے ساتھ ڈومین نام کو مماثل کرنے کے لئے اسے تبدیل کرتا ہے
    ۔ اس سے حملہ آور لوگوں کو بہروپی ویب
  • 6:09 - 6:16
    سائٹ پر بھیج سکتا ہے۔ اگر یہ آپ کے ساتھ ہوتا ہے،
    تو آپ مزید مسائل کا شکار ہو جاتے ہیں
  • 6:16 - 6:24
    کیونکہ آپ اس جعلی ویب سائٹ کو ایسے استعمال کر رہے ہوتے ہیں
    جسے یہ اصلی ہے۔ انٹرنیٹ بہت بڑا ہے اور روز بروز
  • 6:24 - 6:31
    بڑھتا جا رہا ہے۔ لیکن ڈومین نام کے نظام
    اور انٹرنیٹ پروٹوکول کو صحیح سائز کے مطابق ڈیزائن کیا گیا ہے،
  • 6:31 - 6:35
    چاہے انٹرنیٹ کتنا ہی بڑھ کیوں نہ جائے۔
Title:
The Internet: IP Addresses and DNS
Description:

more » « less
Video Language:
English
Duration:
06:45

Urdu subtitles

Revisions Compare revisions