Return to Video

The Internet: Packets, Routing and Reliability

  • 0:00 - 0:08
    [گانے کی الٹی گنتی: 7، 6، 5، 4، 3، 2، 1]
    انٹرنیٹ: پیکٹس، روٹنگ، اور قابل اعتماد
  • 0:08 - 0:14
    ہیلو، میرا نام لین ہے۔ میں یہاں سپوٹیفائی میں ایک سافٹ ویئر
    انجینئر ہوں اور میں یہ تسلیم کرنے والی پہلی فرد ہوں گی
  • 0:14 - 0:19
    کہ میں اکثر انٹرنیٹ کے قابل اعتماد
    پن کو حقیقی سمجھ لیتی ہوں۔ انٹرنیٹ میں اردگرد سفر کرنے والی بڑی
  • 0:19 - 0:23
    مقدار میں معلومات حیران کن ہے۔
    لیکن یہ کیسے ممکن ہے کہ آپ کو ڈیٹا کا ہر حصہ
  • 0:23 - 0:29
    قابل اعتماد طریقے سے پہنچایا جائے؟ کہیں
    کہ آپ اسپاٹیفائی سے کوئی گانا چلوانا چاہتے ہیں۔ ایسا لگتا ہے
  • 0:29 - 0:34
    کہ آپ کا کمپیوٹر براہ راست اسپاٹیفائی سرورز سے
    منسلک ہو جاتا ہے اور اسپاٹیفائی آپ کو براہ راست، وقف شدہ
  • 0:34 - 0:39
    لائن پر ایک گانا بھیجتا ہے۔ لیکن درحقیقت، انٹرنیٹ
    ایسے کام نہیں کرتا ہے۔ اگر انٹرنیٹ
  • 0:39 - 0:44
    براہ راست، وقف شدہ کنکشنز سے بنا ہوتا تو لاکھوں
    صارفین کے شامل ہونے سے چیزوں کا کام
  • 0:44 - 0:48
    کرتے رہنا ناممکن ہوگا۔ خاص کر جبکہ
    اس بات کی کوئی گارنٹی نہیں ہے کہ ہر
  • 0:48 - 0:53
    تار اور کمپیوٹر ہر وقت کام کر رہا ہے۔ اس کے بجائے،
    ڈیٹا انٹرنیٹ پر بہت کم براہ راست
  • 0:53 - 1:01
    فیشن میں سفر کرتا ہے۔ کئی سالوں پہلے، 1970 کے دہائی کے
    اوائل میں، میرے ساتھی بوب کاہن اور میں نے
  • 1:01 - 1:07
    اس ڈیزائن پر کام کرنا شروع کیا تھا جسے ہم اب انٹرنیٹ کہتے ہیں۔
    ہیں۔ باب اور مجھے یہ ذمہ داری اور موقع
  • 1:07 - 1:15
    دیا گیا کہ انٹرنیٹ کے پروٹوکولز اور
    اس کے فن تعمیر کو ڈیزائن کریں۔ لہذا ہم اس وقت تمام وقت سے
  • 1:15 - 1:20
    اور حال سمیت تک
    انٹرنیٹ کی نشوونما اور
  • 1:20 - 1:26
    ارتقاء میں حصہ لیتے رہے۔ ایک کمپیوٹر سے
    دوسرے کمپیوٹر میں معلومات کو منتقل
  • 1:26 - 1:31
    کرنے کا طریقہ بہت دلچسپ ہے۔ اسے مقررہ راستے پر چلنے
    کی ضرورت نہیں ہے، درحقیقت، آپ کا راستہ کمپیوٹر
  • 1:31 - 1:36
    سے کمپیوٹر گفتگو کے دوران بدل سکتا ہے۔
    انٹرنیٹ پر معلومات ایک کمپیوٹر سے دوسرے کمپیوٹر
  • 1:36 - 1:42
    میں جاتی ہے جس میں ہم معلومات کا پیکٹ کہتے ہیں
    اور ایک پیکٹ انٹرنیٹ پر ایک جگہ سے دوسری جگہ سفر کرتا ہے
  • 1:42 - 1:46
    بالکل ایسے ہی جیسے آپ
    کار میں ایک جگہ سے دوسری جگہ پہنچ
  • 1:46 - 1:51
    سکتے ہیں۔ ٹریفک کی بھیڑ یا سڑک کے حالات پر
    منحصر، جب بھی آپ سفر کرتے ہیں تو آپ
  • 1:51 - 1:59
    اسی جگہ پر پہنچنے کے لئے مختلف راستے کا انتخاب کر سکتے ہیں
    یا کرنے پر مجبور ہو سکتے ہیں۔ اور جس طرح
  • 1:59 - 2:04
    آپ کار کے اندر ہر طرح کی چیزیں لے جا سکتے ہیں،
    اسی طرح IP پیکٹس کے ساتھ کئی طرح کی ڈیجیٹل
  • 2:04 - 2:10
    معلومات بھیجی جا سکتی ہے لیکن اس میں کچھ حدود
    ہیں۔ کیا ہوگا اگر مثال کے طور پر آپ اسپیس
  • 2:10 - 2:14
    شٹل کو جہاں اسے بنایا گیا تھا وہاں سے اس جگہ منتقل کرنے کی ضرورت ہے
    جہاں جہاں اسے لانچ کیا جائے گا۔ شٹل ایک ٹرک میں پوری نہیں
  • 2:14 - 2:19
    آتی ہے لہذا اسے حصوں میں تقسیم کرنے کی، ٹرکوں
    کے بیڑے کے ذریعہ منتقل کرنے کی ضرورت
  • 2:19 - 2:23
    ہے۔ وہ سب مختلف راستے اختیار
    کر سکتے ہیں اور مختلف اوقات میں منزل تک پہنچ سکتے
  • 2:23 - 2:28
    ہیں۔ لیکن جب تمام حصے وہاں پہنچ جائیں، تو
    آپ حصوں کو دوبارہ جوڑ کر شٹل مکمل کر سکتے ہیں
  • 2:28 - 2:34
    اور یہ لانچ کے لئے تیار ہو جائے گا۔ انٹرنیٹ پر
    بھی تفصیلات اسی طرح کام کرتی ہیں۔ اگر
  • 2:34 - 2:40
    آپ کے پاس بہت بڑی شبیہہ ہے جو آپ
    اپنے دوست کو بھیجنا چاہتے ہیں یا کسی ویب سائٹ پر اپ لوڈ کرنا چاہتے ہیں،
  • 2:40 - 2:45
    تو یہ تصویر 1 اور 0 کے لاکھوں بٹس کے 10 سے مل کر
    بنے ہو سکتے ہیں، ایک پیکٹ میں بھیجنے کے لئے
  • 2:45 - 2:50
    بہت زیادہ تعداد ہے۔ چونکہ یہ کمپیوٹر پر موجود ڈیٹا ہے،
    لہذا تصویر بھیجنے والا کمپیوٹر اسے تیزی سے
  • 2:50 - 2:56
    سینکڑوں یا ہزاروں چھوٹے چھوٹے حصوں میں تقسیم
    کر سکتا ہے جسے پیکٹس کہتے ہیں۔ کاروں یا ٹرکوں کے برعکس
  • 2:56 - 3:00
    ان پیکٹس میں ڈرائیور نہیں ہوتے ہیں اور وہ اپنا راستہ
    منتخب نہیں کرتے ہیں۔ ہر
  • 3:00 - 3:05
    پیکٹ میں انٹرنیٹ پتہ ہوتا ہے کہ یہ کہاں سے
    آیا ہے اور کہاں جا رہا ہے۔ انٹرنیٹ پر روٹرز کہلانے والے خصوصی
  • 3:05 - 3:09
    کمپیوٹرز ٹریفک کے منتظمین کی حیثیت سے کام کرتے ہیں
    تاکہ پیکٹس کو نیٹ ورک کے ذریعے
  • 3:09 - 3:15
    روانگی سے چلتا رہنے دیا جائے۔ اگر کسی ایک راستہ میں بھیڑ ہو، تو
    انفرادی پیکٹ انٹرنیٹ کے ذریعے مختلف راستوں کا
  • 3:15 - 3:20
    سفر کر سکتے ہیں اور وہ منزل پر قدرے مختلف
    وقت میں یا پھر ترتیب سے ہٹ کر پہنچ
  • 3:20 - 3:27
    سکتے ہیں۔ آئیں اس کے بارے میں بات کرتے ہیں کہ
    یہ کیسے کام کرتا ہے۔ انٹرنیٹ پروٹوکول کے ایک حصے کے طور
  • 3:27 - 3:31
    پر، ہر روٹر پیکٹس بھیجنے کے لئے متعدد
    راستوں کا سراغ رکھتا ہے، اور یہ پیکٹ کے لئے
  • 3:31 - 3:37
    منزل مقصود IP پتہ کی بنیاد پر ڈیٹا کے ہر
    حصے کے لئے سستا ترین راستہ چنتا ہے۔
  • 3:37 - 3:42
    اس بات میں سب سے سستے کا مطوب لاگت نہیں ہے،
    بلکہ وقت اور غیر تکنیکی عوامل جیسے کمپنیوں کے
  • 3:42 - 3:47
    مابین سیاست اور تعلقات ہیں۔ اکثر
    ڈیٹا کے سفر کرنے کے لئے بہترین راستہ ضروری نہیں کہ سب سے
  • 3:47 - 3:53
    زیادہ براہ راست ہو۔ راستوں کے اختیارات کا ہونا نیٹ ورک
    کی نقص کی برداشت بناتا ہے۔ جس کا مطلب ہے کہ
  • 3:53 - 3:58
    نیٹ ورک پیکٹ بھیجنا جاری رکھ سکتا ہے یہاں تک کہ
    اگر کچھ انتہائی غلط ہو جائے۔
  • 3:58 - 4:05
    یہ انٹرنیٹ کے کلیدی اصول کی بنیاد ہے۔
    انٹرنیٹ: قابل اعتماد پن۔ اب یہ کہ، اگر آپ کچھ ڈیٹا
  • 4:05 - 4:09
    کی درخواست کرنا چاہتے ہیں اور سب کچھ فراہم نہیں کیا گیا ہے
    تو؟ کہیں کہ آپ کوئی گانا سننا چاہتے ہیں۔
  • 4:09 - 4:15
    آپ کس طرح 100% یقین کر سکتے ہیں کہ تمام ڈیٹا منتقل
    کیا جائے گا تاکہ گانا بالکل ٹھیک طریقے سے چلے؟
  • 4:15 - 4:21
    اپنے نئے بہترین دوست کو TCP (ٹرانسمیشن کنٹرول
    پروٹوکول) سے متعارف کرانا۔ TCP آپ کے تمام ڈیٹا کو بطور
  • 4:21 - 4:27
    پیکٹس بھیجنے اور وصول کرنے کو منظم کرتا ہے۔
    اس کسی ضمانت شدہ ڈاک سروس کے طور پر سوچیں۔
  • 4:27 - 4:32
    جب آپ اپنے آلے پر گانے کی درخواست کرتے ہیں،
    تو اسپاٹیفائی بہت سے پیکٹس میں تقسیم شدہ ایک گانا بھیجتا ہے۔
  • 4:32 - 4:37
    جب آپ کے پیکٹس آتے ہیں، تو TCP ایک مکمل فہرست سازی کرتا ہے
    اور موصول ہوئے ہر پیکٹ کی قبولیتیں واپس
  • 4:37 - 4:43
    بھیجتا ہے۔ اگر سارے پیکٹس موجود ہیں،
    تو TCP آپ کی فراہمی کے لئے اشارہ بھجتا ہے اور آپ کا کام مکمل
  • 4:43 - 4:55
    ہو جاتا ہے۔ (گانا چل رہا ہے) اگر TCP کو پتہ چلتا
    ہے کہ کچھ پیکٹس غائب ہیں، تو وہ اشارہ نہیں بھیجے گا،
  • 4:55 - 5:00
    ورنہ آپ کے گانے کی آواز ٹھیک نہیں ہوگی یا گانا کا کچھ حصہ
    غائب ہو سکتا ہے۔ ہر گمشدہ یا نامکمل پیکٹ کے لئے،
  • 5:00 - 5:06
    اسپاٹیفائی انہیں دوبارہ بھیجے گا۔
    جب TCP نے اس گانے کی درخواست کے لئے کی پیکٹوں کی فراہمی
  • 5:06 - 5:13
    کی تصدیق کر دیتا ہے تو آپ کا گانا چلنا شروع
    ہو جائے گا۔ TCP اور روٹر سسٹم کے بارے میں زبردست
  • 5:13 - 5:19
    بات یہ ہے کہ وہ قابل توسیع ہیں۔ وہ
    8 یا 8 بلین آلات کے ساتھ بھی کام کر سکتے ہیں۔ درحقیقت،
  • 5:19 - 5:23
    نقص برداشت اور فالتو پن کے ان اصولوں
    کی وجہ سے، ہم جتنے زیادہ راؤٹروں کا اضافہ کریں گے انٹرنیٹ
  • 5:23 - 5:28
    اتنا ہی زیادہ قابل اعتماد بنے گا۔ یہ بھی
    زبردست بات ہے کہ ہم سروس کو استعمال کرنے والے
  • 5:28 - 5:34
    کسی بھی شخص کے لئے سروس میں رکاوٹ پیدا کیے بغیر انٹرنیٹ کو پھیلا اور توسیع کر سکتے
    ہیں۔ انٹرنیٹ فزیکل طور پر منسلک لاکھوں
  • 5:34 - 5:39
    نیٹورکس اور اربوں کمپیوٹر اور آلات سے مل کر
    بنا ہوا ہے۔ یہ مختلف سسٹمز
  • 5:39 - 5:44
    جو انٹرنیٹ سے ایک دوسرے کے منسلک ہونے،
    ایک دوسرے کے ساتھ مواصلت کرنے، اور انٹرنیٹ پر
  • 5:44 - 5:51
    ڈیٹا بھیجنے کے طریقہ کار کے لئے متفقہ
    معیارات کی وجہ سے مل کر کام کرنے کا سبب بنتے ہیں۔
  • 5:51 - 5:56
    انٹرنیٹ کے ساتھ کمپیوٹنگ آلات، یا راؤٹرز،
    تمام پیکٹس کو اپنی منزل تک پہنچنے میں مدد کرتے ہیں
  • 5:56 - 6:03
    جہاں انہیں، اگر ضروری ہو تو ترتیب میں،
    دوبارہ یکجا کیا جاتا ہے۔ ایسا دن میں اربوں بار ہوتا ہے، چاہے
  • 6:03 - 6:09
    آپ اور دوسرے لوگ ای میل بھیج رہے ہوں،
    کسی ویب پیج کا دورہ کر رہے ہوں، ویڈیو
  • 6:09 - 6:14
    چیٹ کر رہے ہوں، موبائل ایپ استعمال کر رہے ہوں،
    یا جب انٹرنیٹ پر سنسرز یا آلات آپس
  • 6:14 - 6:15
    میں بات کر رہے ہوتے ہیں۔
Title:
The Internet: Packets, Routing and Reliability
Description:

more » « less
Video Language:
English
Duration:
06:26

Urdu subtitles

Revisions Compare revisions