Return to Video

قدرتی دنیا کے چپے ہوئے عجوبے

  • 0:00 - 0:02
    وہ کونسا دوراہا ہے
  • 0:02 - 0:07
    جہاں ٹیکنالوجی، آرٹ اور سائینس ملتے ہیں؟
  • 0:07 - 0:09
    جستجو اور حیرت،
  • 0:09 - 0:12
    کیونکہ یہ ہمیں مجبور کرتے ہیں کہ ہم تلاش کریں،
  • 0:12 - 0:15
    کیونکہ ہم ان چیزوں میں گھرے ہوئے ہیں جو ہم دیکھ نہیں سکتے-
  • 0:15 - 0:17
    اور مجھے فلم بنانا اچھا لگتا ہے
  • 0:17 - 0:18
    جس سے میں ایک سفر پر جاسکتا ہوں
  • 0:18 - 0:21
    وقت اور جگہ کے درمیانی راستوں سے گزرتے ہوئے،
  • 0:21 - 0:23
    تاکہ میں اندیکھی چیزوں کو دکھا سکوں،
  • 0:23 - 0:25
    اس سے ہوتا یہ ہے کہ،
  • 0:25 - 0:27
    یہ ہمارے ذہن کو وسیع کرتا ہے،
  • 0:27 - 0:29
    ہماری سوچ کو تبدیل کرتا ہے،
  • 0:29 - 0:32
    یہ ہمارے دماغ کو کھول دیتا ہے
  • 0:32 - 0:34
    اور دل کو چھولیتا ہے-
  • 0:34 - 0:35
    یہ کچھ مناظر ہیں
  • 0:35 - 0:37
    میری تھری ڈی - آئی میکس فلم سے،
  • 0:37 - 0:40
    "اندیکھی دنیا کے راز"
  • 0:40 - 0:42
    (موسیقی)
  • 0:42 - 0:44
    کچھ حرکات بہت آہستہ ہوتی ہیں
  • 0:44 - 0:46
    جو ہماری آنکھیں نہیں دیکھ سکتی،
  • 0:46 - 0:49
    اور ٹائم لیپس ہمیں دریافت کرکے دیتا ہے
  • 0:49 - 0:52
    اور زندگی کے بارے میں ہماری سوچ کو وسیع کرتا ہے-
  • 0:52 - 0:56
    ہم دیکھ سکتے ہیں کے کس طرح مخلوق ابھرتی اور بڑھتی ہے،
  • 0:56 - 1:00
    کس طرح ایک ڈال زندہ رہنے کے لئے
    جنگل کے فرش پر سرکتی ہے
  • 1:00 - 1:03
    تاکہ سورج کی روشنی حاصل کرسکے-
  • 1:04 - 1:06
    اور اس وسیع تصویر میں،
  • 1:06 - 1:11
    ٹائم لیپس ہمیں ہمارے سیارے کو حرکت کرتے ہوئے دکھاتا ہے-
  • 1:11 - 1:14
    ہم نہ صرف قدرت کی وسیع حرکات دیکھ سکتے ہیں،
  • 1:14 - 1:17
    بلکہ انسانیت کی نہ رکنے والی حرکات بھی دیکھ سکتے ہیں-
  • 1:17 - 1:21
    ہر لکیر بناتا ہوا نکتہ ایک ہوائی جہاز ہے،
  • 1:21 - 1:22
    اور ہوائی جہازوں کے ٹریفک کے ڈیٹا کو
  • 1:22 - 1:24
    ٹائم لیپس کی تصویر میں تبدیل کرکے،
  • 1:25 - 1:27
    ہم دیکھ سکتے ہیں ایک ایسی چیز جو مسلسل ہمارے اوپر ہے
  • 1:27 - 1:28
    مگر نظر نہیں آتی:
  • 1:28 - 1:34
    یونائیٹڈ اسٹیٹس کے اوپر اڑنے والے ہوئی جہازوں کا وسیع جال۔
  • 1:34 - 1:37
    ہم یہی چیز سمندر میں موجود بحری جہازوں کے ساتھ بھی کرسکتے ہیں-
  • 1:37 - 1:39
    ہم ڈیٹا کو ٹائم لیپس کے ذریعہ
  • 1:39 - 1:44
    ایک عالمی معاشی نظام کی حرکت کی تصویر بناسکتے ہیں-
  • 1:50 - 1:51
    اور عشروں کا ڈیٹا
  • 1:51 - 1:53
    ہمیں دکھاتا ہے اس پورے سیارے کو
  • 1:53 - 1:55
    ایک زندہ مخلوق کے طور پر
  • 1:55 - 1:58
    بحر میں گردش کرنے والے بہاؤ پر زندہ رہتی ہوئی
  • 1:58 - 2:03
    اور آسمان میں موجود گھومتے ہوئے بادلوں سے،
  • 2:03 - 2:05
    آسمانی بجلی سے دھڑکتے ہوئے،
  • 2:05 - 2:08
    آرورا بوریلس کا تاج پہنے ہوئے-
  • 2:08 - 2:12
    یہ شاید سب سے زبردست ٹائم لیپس تصویر ہو:
  • 2:12 - 2:16
    جیسے دنیا کی اندرونی ساخت کو زندگی دے دی گئی ہو-
  • 2:19 - 2:21
    اور دوسری انتہائی طرف،
  • 2:21 - 2:25
    کچھ ایسی چیزیں ہیں جو ہماری آنکھ سے تیز حرکت کرتی ہیں،
  • 2:25 - 2:27
    مگر ہمارے پاس، اس دنیا میں دیکھنے کے لئے،
  • 2:27 - 2:30
    ٹیکنالوجی بھی موجود ہے-
  • 2:32 - 2:33
    تیز کیمروں کی مدد سے،
  • 2:33 - 2:35
    ہم ٹائم لیپس کا الٹ کرسکتے ہیں-
  • 2:35 - 2:37
    ہم ایسی حرکات کی تصاویر کھینچ سکتے ہیں جو ہماری نظر سے
  • 2:37 - 2:41
    ہزار گنا تیز ہیں-
  • 2:41 - 2:45
    اور ہم دیکھ سکتے ہیں کہ قدرت کے
    ذہین آلات کس طرح کام کرتے ہیں،
  • 2:45 - 2:48
    اور شاید ہم ان کی نقل کرسکتے ہیں-
  • 2:50 - 2:53
    جب ایک ڈریگن فلائی پاس سے اڑتی ہوئی گزرتی ہے،
  • 2:53 - 2:54
    آپ شاید نہ جان سکیں،
  • 2:54 - 2:57
    مگر یہ قدرت میں بہترین اڑنے والی چیز ہے-
  • 2:57 - 3:01
    یہ ہوا میں ساکت رہ سکتی ہے، پیچھے اڑسکتی ہے،
  • 3:01 - 3:04
    اور الٹا بھی اڑسکتی ہے-
  • 3:04 - 3:08
    اور ایک کیڑے کے پر میں موجود نشان کو دیکھتے ہوئے،
  • 3:08 - 3:11
    ہم ہوا کے گزرنے کا خاکہ بنا سکتے ہیں-
  • 3:11 - 3:13
    کسی کو یہ راز معلوم نہیں تھا،
  • 3:13 - 3:15
    مگر تیز رفتار کیمرا دکھاتا ہے کہ ایک ڈریگن فلائی
  • 3:15 - 3:17
    اپنے چاروں پروں کو ایک ہی وقت میں
  • 3:17 - 3:20
    مختلف سمت میں حرکت دے سکتی ہے-
  • 3:20 - 3:21
    اور جو ہم سیکھتے ہیں وہ ہمیں لےجاسکتا ہے
  • 3:21 - 3:23
    نئی قسم کے اڑنے والے روبوٹ کی راہ پر
  • 3:23 - 3:25
    جو اہم اور دوردراز علاقوں کے بارے میں
  • 3:25 - 3:31
    ہماری نظر کو وسیع کرسکتا ہے-
  • 3:32 - 3:34
    ہم دیوقامت ہیں، اور ہم لاعلم ہیں
  • 3:34 - 3:37
    ان چیزوں سے جو بہت چھوٹی ہونے کے باعث ہمیں دکھائی نہیں دیتیں -
  • 3:37 - 3:40
    الیکٹران مائیکروسکوپ الیکٹران مارتا ہے
  • 3:40 - 3:41
    جس سے تصاویر بنتی ہیں
  • 3:41 - 3:43
    جو چیزوں کو بہت بڑا کرکے دکھاتا ہے
  • 3:43 - 3:45
    قریب 10 لاکھ گنا بڑا-
  • 3:45 - 3:49
    یہ تتلی کا انڈا ہے-
  • 3:49 - 3:53
    اور بھی اندیکھی مخلوق ہیں جو آپ کے تمام جسم پر رہتی ہیں،
  • 3:53 - 3:55
    جن میں شامل ہیں چھوٹے کیڑے جو اپنی تمام زندگی
  • 3:55 - 3:57
    آپ کی پلکوں پر گزارتے ہیں،
  • 3:57 - 4:01
    جو رات کو آپ کی جلد پر رینگتے ہیں-
  • 4:01 - 4:04
    کیا آپ اندازہ لگا سکتے ہیں کہ یہ کیا ہے؟
  • 4:04 - 4:06
    شارک کی جلد-
  • 4:08 - 4:11
    بھنورے کا منہ-
  • 4:12 - 4:15
    فروٹ فلائی کی آنکھ-
  • 4:17 - 4:20
    ایک انڈے کا چھلکا-
  • 4:22 - 4:25
    ایک جوں-
  • 4:27 - 4:31
    ایک گهونگے کی زبان-
  • 4:32 - 4:34
    ہم سمجھتے ہیں کہ ہمیں جانوروں کے جہاں کا بہت علم ہے،
  • 4:34 - 4:37
    مگر شاید لاکھوں کی تعداد میں بہت چھوٹی مخلوق ہیں
  • 4:37 - 4:41
    جو دریافت ہونے کی منتظر ہے-
  • 4:43 - 4:46
    ایک مکڑا بھی بہت راز رکھتا ہے،
  • 4:46 - 4:48
    کیونکہ مکڑے کے تار لوہے سے زیادہ
  • 4:48 - 4:50
    مضبوط ہے
  • 4:50 - 4:52
    مگر الاسٹک جیسی ہے-
  • 4:52 - 4:54
    یہ سفر ہمیں بالکل نیچے لے جائیگا
  • 4:54 - 4:56
    بہت ہی باریک دنیا میں-
  • 4:56 - 4:59
    یہ ریشمی تار 100 گنا باریک ہے
  • 4:59 - 5:02
    انسانی بال کے مقابلے میں-
  • 5:02 - 5:05
    اس پر بیکٹیریا ہے،
  • 5:05 - 5:08
    اور بیکٹیریا کے قریب، 10 گنا چھوٹا،
  • 5:08 - 5:11
    ایک وائرس ہے-
  • 5:11 - 5:15
    اس کے اندر، 10 گنا چھوٹے،
  • 5:15 - 5:18
    3 عدد ڈی این اے کی ڈور ہیں،
  • 5:18 - 5:21
    اور ہمارے طاقتور ترین مائیکروسکوپ
    کی حد کو چھوتے ہوئے،
  • 5:21 - 5:26
    کاربن کے انفرادی ایٹم ہیں-
  • 5:26 - 5:28
    طاقتور مائیکروسکوپ کی نوک سے،
  • 5:28 - 5:30
    ہم ایٹموں کو ہلا سکتے ہیں
  • 5:30 - 5:36
    اور بہت چھوٹے آلات کو بنانے کی شروعات کرسکتے ہیں-
  • 5:36 - 5:38
    ایک دن کچھ ہمارے جسم میں گشت کریں گے
  • 5:38 - 5:40
    ہر قسم کے امراض کے لئے
  • 5:40 - 5:44
    اور راستے میں آنے والی بند شریانوں کو کھولدیں گے-
  • 5:44 - 5:47
    مستقبل کی بہت چھوٹی کیمیائی مشینیں
  • 5:47 - 5:51
    ایک دن، شاید، ڈی-این-اے ٹھیک کرسکیں-
  • 5:51 - 5:54
    ہم غیرمعمولی ترقی کی دہانے پر کھڑیں ہیں،
  • 5:54 - 5:56
    جو ہماری زندگی کے راز دریافت کرنے کی جستجو سے
  • 5:56 - 6:00
    پیدا ہوئی ہے-
  • 6:01 - 6:03
    تو خلائی دھول کی بارش کے نیچے،
  • 6:03 - 6:06
    ہوا بھری پڑی ہے، پھول کے ذروں سے،
  • 6:06 - 6:09
    باریک ہیروں اور جواہر سے جو دوسرے سیاروں،
  • 6:09 - 6:11
    اور سوپر نووا کے دھماکوں سے آتے ہیں-
  • 6:11 - 6:13
    لوگ اپنی زندگی گزارتے ہیں
  • 6:13 - 6:19
    اندیکھی چیزوں میں گھرے ہوکر-
  • 6:19 - 6:20
    یہ جان کر کہ ہمارے آس پاس بہت کچھ ہے
  • 6:20 - 6:22
    جو ہم دیکھ سکتے ہیں
  • 6:22 - 6:25
    ہمیشہ کے لئے ہماری دنیا کے بارے میں سوچ کو تبدیل کردیتا ہے،
  • 6:25 - 6:27
    اور اندیکھے جہانوں کو دیکھ کر، ہم جانتے ہیں
  • 6:27 - 6:29
    کہ ہم رہتے ہیں اس زندہ کائنات میں،
  • 6:29 - 6:32
    اور یہ نظریہ تجسس پیدا کرتا ہے
  • 6:32 - 6:35
    اور ہمیں حوصلہ دیتا ہے کہ ہم دریافت کرنے والے بنیں
  • 6:35 - 6:38
    اپنے ہی گھر میں-
  • 6:38 - 6:41
    کون جانتا ہے کہ کیا دیکھنا باقی ہے
  • 6:41 - 6:45
    اور کونسے نئے عجوبے ہماری زندگیاں بدل دیں-
  • 6:45 - 6:50
    یہ ہمیں دیکھنا پڑیگا-
  • 6:50 - 6:55
    (تالیاں)
  • 6:55 - 7:02
    شکریہ (تالیاں)
Title:
قدرتی دنیا کے چپے ہوئے عجوبے
Speaker:
لوئی شوارٹزبرگ
Description:

ہم ایک ایسی دنیا میں رہتے ہیں جہاں اندیکھی خوبصورتی ہے، اتنی مختصر اور نازک کہ انسانی آنکھ نہ دیکھ پاۓ- اس اندیکھی دنیا کو روشنی میں لانے کے لئے، فلمساز 'لوئی شوارٹزبرگ' وقت اور جگہ کی حدود کو تیز کیمروں، ٹائم لیپس اور مائیکروسکوپ کی مدد سے موڑتے ہیں- ٹیڈ 2014 میں، وہ اپنے تازہ پراجیکٹ کی اہم جھلکیاں دکھاتے ہیں، ایک تھری- ڈی فلم سے، جس کا عنوان "اندیکھی دنیا کے عجوبے" ہے، جو قدرت کے حیرت انگیز عجوبوں کو آہستہ کرکے، تیز کرکے، اور بڑا کرکے دکھاتی ہے-

more » « less
Video Language:
English
Team:
TED
Project:
TEDTalks
Duration:
07:24

Urdu subtitles

Revisions